Wed 28 Aug 2019

Scammers, Hackers and Fraudulent are sending emails and messages over social media like WhatsApp, twitter or Facebook to people saying that they are eligible for tax refunds or other similar lucrative. The email asks the user to click a link and get their sums.

Further to that they ask user to login to the system where naive user use their banks or email or social accounts or financials credentials which promptly give hackers and fraudulent access to their information and accounts.

Once the user clicks on the phishing link, it takes them to a website that has similar look and feel that looks like promising and authentic. However, if you look closely, the URL of the website gives it away as it says.

  • Do not click on such links and be vigilant and look for URL and SSL certificate (locked / green).
  • Do not install Mobile apps and games without looking into permissions what they asks as they would ultimately gets access to mobile and data.
  • Be vigilante in giving permission to Mobile apps.
  • Be aware of using proxy servers, free Wi-Fi and VPN servers.
  • Never share personal Information, PIN numbers, OTP, passwords or Credit or Debit cards number or CCV code, banks, other financial accounts numbers, NTN etc.
See below one sample and informative video

گھوٹالے کرنے والے ، ہیکر اور دھوکہ دہی کرنے والے عام  لوگوں کو ای میل یا سوشل میڈیا واٹس ایپ ، ٹویٹر یا فیس بک پر پیغامات بھیج رہے ہیں کہ وہ ٹیکس کی واپسی یا اسی طرح کے دوسرے منافع یا رقم کی وصولی کے اہل ہیں۔ ای میل میں صارف سے کہا جاتا ہے کہ وہ کسی لنک پر کلک کریں اور ان کی رقم وصول کریں۔

اس کے علاوہ وہ صارف سے اس ویب سائٹ یا موبائل ایپلیکیشن میں لاگ ان ہونے کو کہتے ہیں جہاں صارف اپنے بینکوں یا ای میل یا معاشی اکاؤنٹس یا پاس ورڈ کا استعمال کرتے ہیں جو ہیکرز کو ان کی معلومات اور اکاؤنٹس میں فورا رسائی فراہم کر دیتا ہے ۔

ایک بار جب صارف فشینگ لنک پر کلیک کرتا ہے تو ، وہ لنک انہیں ایک ایسی ویب سائٹ پر لے جاتا ہے جو بلکل اصل ویب سائٹ  کی طرح نظر آتی ہے تاہم ، اگر آپ قریب سے دیکھیں تو ، ویب سائٹ کا یو آر ایل دوسرا ہوتا ہے اصل نہیں ۔

  • ایسے لنکس پر کلک نہ کریں اور چوکس رہیں اور یو آر ایل اور ایس ایس ایل سرٹیفکیٹ (لاک سائن / سبز رنگ) دیکھ لیں۔
  • موبائل ایپلیکیشن اور گیمس انسٹال نہ کریں ان کی permissions پر غور کیے بغیر کیوں کہ ایسا کرنے سے آخر کار انہیں آپ کے موبائل اور ڈیٹا تک رسائی حاصل ہوجاتی ہے۔
  • موبائل ایپس کو اجازت دینے میں چوکس رہیں۔
  • پراکسی سرورز ، مفت وائی فائی اور وی پی این سرورز کے استعمال سے محتاط رہیں۔
  • ذاتی معلومات ، پن نمبر ، او ٹی پی ، پاس ورڈز یا کریڈٹ یا ڈیبٹ کارڈ نمبر یا سی سی وی کوڈ ، بینک ، دوسرے مالی اکاؤنٹس نمبر ، این ٹی این وغیرہ کبھی بھی شیئر نہ کریں۔

ایک نمونہ اور معلوماتی ویڈیو نیچے دیکھیں۔

 

Beaware+-+physhing+email+link+example+1.jpg


Beaware+-+physhing+email+link+example+2.jpg

Comments here

Add Comment Post comment

 
 
 
   Country flag

Loading

For mobile, tablets or touch devices, if verify button is disabed, please press Enter after entering captcha verfication text than click Verify button.


Next Post  Previous Post :
Previous Post  Next Post : کچھ باتیں - کہاوتیں